Translations into Urdu:

  • کیا تم مجھ سے شادی کرو گے 
    (Phrase  )
     
    marriage proposal

Other meanings:

 
Used to propose marriage to someone.

    Show declension

Example sentences with "will you marry me", translation memory

add example
He said ( to Musa - Moses ) : I intend to marry to you one of my two daughters by ( the dower ) that you serve me on hire for eight years but if you complete ten ( years ) , it will be ( a favour ) from you . And I do not want to make it hard for you . If Allah wills you will find me of the pious .انہوں نے موسٰی علیہ السلام سے کہا : میں چاہتا ہوں کہ اپنی ان دو لڑکیوں میں سے ایک کا نکاح آپ سے کردوں اس مہر پر کہ آپ آٹھ سال تک میرے پاس اجرت پر کام کریں ، پھر اگر آپ نے دس سال پور ے کردیئے تو آپ کی طرف سے احسان ہوگا اور میں آپ پر مشقت نہیں ڈالنا چاہتا ، اگر اللہ نے چاہا تو آپ مجھے نیک لوگوں میں سے پائیں گے ۔
If he divorces you then it may well be that your Lord will give him in your place better wives than yourselves ( who ) will be obedient , true believers , submissive , penitent , worshippers , given to fasting , ( some ) formerly married and ( some ) virgins .اگر وہ تمہیں طلاق دے دیں تو عجب نہیں کہ ان کا رب انہیں تم سے بہتر ازواج بدلہ میں عطا فرما دے جو فرمانبردار ، ایماندار ، اطاعت گزار ، توبہ شعار ، عبادت گزار ، روزہ دار ، بعض شوہر دیدہ اور بعض کنواریاں ہوں گی ۔
And if you have the apprehension that you will not be able to treat the orphan girls justly then marry the women you like and who are lawful for you , two or three or four ( but this sanction is conditional on justice ) . Then if you fear that you will not be able to treat ( more than one wife ) justly then ( marry ) only one woman or the maids who have come under your possession ( in accordance with the Islamic law ) . This makes it more likely that you restrain you from committing injustice .اور اگر تمہیں اندیشہ ہو کہ تم یتیم لڑکیوں کے بارے میں انصاف نہ کر سکو گے تو ان عورتوں سے نکاح کرو جو تمہارے لئے پسندیدہ اور حلال ہوں ، دو دو اور تین تین اور چار چار مگر یہ اجازت بشرط عدل ہے ، پھر اگر تمہیں اندیشہ ہو کہ تم زائد بیویوں میں عدل نہیں کر سکو گے تو صرف ایک ہی عورت سے نکاح کرو یا وہ کنیزیں جو شرعا تمہاری ملکیت میں آئی ہوں ، یہ بات اس سے قریب تر ہے کہ تم سے ظلم نہ ہو ۔
This day good and pure things have been made lawful for you . And the sacrificed animal of those given the ( Revealed ) Book is ( also ) lawful for you , while your sacrificed animal is lawful for them . And ( likewise ) chaste Muslim women as well as chaste women from amongst those given the Book before you ( are lawful for you ) when you have paid them their dower , ( provided ) you marry them for a conjugal life ( adhering to chasteness and decency ) and not for open lasciviousness ( merely satisfying your lust ) , nor for secret love affairs . The one who denies faith ( in the Commandments of Allah ) , all his work is ruined and he will ( also ) be among the losers in the Hereafter .آج تمہارے لئے پاکیزہ چیزیں حلال کر دی گئیں ، اور ان لوگوں کا ذبیحہ بھی جنہیں الہامی کتاب دی گئی تمہارے لئے حلال ہے اور تمہارا ذبیحہ ان کے لئے حلال ہے ، اور اسی طرح پاک دامن مسلمان عورتیں اور ان لوگوں میں سے پاک دامن عورتیں جنہیں تم سے پہلے کتاب دی گئی تھی تمہارے لئے حلال ہیں جب کہ تم انہیں ان کے مہر ادا کر دو ، مگر شرط یہ کہ تم انہیں قید نکاح میں لانے والے عفت شعار بنو نہ کہ محض ہوس رانی کی خاطر اعلانیہ بدکاری کرنے والے اور نہ خفیہ آشنائی کرنے والے ، اور جو شخص احکام الٰہی پر ایمان لانے سے انکار کرے تو اس کا سارا عمل برباد ہوگیا اور وہ آخرت میں بھی نقصان اٹھانے والوں میں سے ہوگا ۔
And whoever of you cannot afford to marry free believing women may marry those believing slave girls who are in your possession ( under Islamic Law ) . And Allah knows best ( the state of ) your belief . You ( all ) are one from another . So , marry these ( slave girls ) with the permission of their masters , and pay them their dowers according to custom , provided they are wedlocked ( being chaste ) , neither committing illegal sex nor taking secret lovers . If they commit fornication after they have entered into wedlock , their punishment will be the half of that ( appointed ) for free ( unmarried ) women . This permission is for him among you who fears ( indulging in ) sin and if you practise self - restraint that is better for you . And Allah is Most Forgiving , Ever - Merciful .اور تم میں سے جو کوئی اتنی استطاعت نہ رکھتا ہو کہ آزاد مسلمان عورتوں سے نکاح کر سکے تو ان مسلمان کنیزوں سے نکاح کرلے جو شرعا تمہاری ملکیت میں ہیں ، اور اللہ تمہارے ایمان کی کیفیت کو خوب جانتا ہے ، تم سب ایک دوسرے کی جنس میں سے ہی ہو ، پس ان کنیزوں سے ان کے مالکوں کی اجازت کے ساتھ نکاح کرو اور انہیں ان کے مہر حسب دستور ادا کرو درآنحالیکہ وہ عفت قائم رکھتے ہوئے قید نکاح میں آنے والی ہوں نہ بدکاری کرنے والی ہوں اور نہ درپردہ آشنائی کرنے والی ہوں ، پس جب وہ نکاح کے حصار میں آجائیں پھر اگر بدکاری کی مرتکب ہوں تو ان پر اس سزا کی آدھی سزا لازم ہے جو آزاد کنواری عورتوں کے لئے مقرر ہے ، یہ اجازت اس شخص کے لئے ہے جسے تم میں سے گناہ کے ارتکاب کا اندیشہ ہو ، اور اگر تم صبر کرو تو یہ تمہارے حق میں بہتر ہے ، اور اللہ بخشنے والا مہر بان ہے ۔
Say : Tell me , if this ( Quran ) is from Allah and you deny it and a witness from the Children of Israel ( also ) bears testimony to the mention of ( the revelation of ) such a Book ( in the Revealed Books revealed earlier ) , then he believes ( in it as well ) but ( despite that ) you show arrogance , ( then what will be your fate ? ) Surely Allah does not guide the wrongdoing people .فرما دیجئے : ذرا بتاؤ تو اگر یہ قرآن اللہ کی طرف سے ہو اور تم نے اس کا انکار کر دیا ہو اور بنی اسرائیل میں سے ایک گواہ بھی پہلی آسمانی کتابوں سے اس جیسی کتاب کے اترنے کے ذکر پر گواہی دے پھر وہ اس پر ایمان بھی لایا ہو اور تم اس کے باوجود غرور کرتے رہے تو تمہارا انجام کیا ہوگا ؟ ، بیشک اللہ ظالم قوم کو ہدایت نہیں فرماتا ۔
Remember the word that I said unto you , The servant is not greater than his lord . If they have persecuted me , they will also persecute you ; if they have kept my saying , they will keep yours also .جو بات میں نے تم سے کہی تھی اسے یاد رکھو کہ نوکر اپنے مالک سے بڑا نہیں ہوتا ۔ اگر انہوں نے مجھے ستایا تو تمہیں بھی ستائیں گے ۔ اگر انہوں نے میری بات پر عمل کیا تو تمہاری بات پر بھی عمل کریں گے ۔
Musa ( Moses ) said : So ( get out from here and ) go away . There is for you a lifelong ( punishment ) that you will keep saying ( to everyone ) : Touch ( me ) not , ( touch me not ) . And there is yet another promise ( of punishment ) for you which will not be averted at all . And look at this ( self - made ) god of yours to which you held fast ( in worship ) . We will surely burn it and scatter ( its dust ) well over the river .موسٰی علیہ السلام نے فرمایا : پس تو یہاں سے نکل کر چلا جا چنانچہ تیرے لئے ساری زندگی میں یہ سزا ہے کہ تو ہر کسی کو یہی کہتا رہے : مجھے نہ چھونا مجھے نہ چھونا ، اور بیشک تیرے لئے ایک اور وعدۂ عذاب بھی ہے جس کی ہرگز خلاف ورزی نہ ہوگی ، اور تو اپنے اس من گھڑت معبود کی طرف دیکھ جس کی پوجا پر تو جم کر بیٹھا رہا ، ہم اسے ضرور جلا ڈالیں گے پھر ہم اس کی راکھ کو ضرور دریا میں اچھی طرح بکھیر دیں گے ۔
Say : I am not the first Messenger ( towards mankind that no precedent of Messengership exists before me ) . Nor do I know of my own accord ( i . e . purely by means of my own mental faculty and self - application ) what will be done to me or what will be done to you . ( My knowledge is nothing except that ) I follow that Revelation alone which is sent to me . ( It is this that provides me knowledge about everything . ) And I am simply a clear Warner ( on the basis of this knowledge obtained through Revelation ) .آپ فرما دیں کہ میں انسانوں کی طرف کوئی پہلا رسول نہیں آیا کہ مجھ سے قبل رسالت کی کوئی مثال ہی نہ ہو اور میں ازخود یعنی محض اپنی عقل و درایت سے نہیں جانتا کہ میرے ساتھ کیا سلوک کیا جائے گا اور نہ وہ جو تمہارے ساتھ کیا جائے گا ، میرا علم تو یہ ہے کہ میں صرف اس وحی کی پیروی کرتا ہوں جو میری طرف بھیجی جاتی ہے وہی مجھے ہر شے کا علم عطا کرتی ہے اور میں تو صرف اس علم بالوحی کی بنا پر واضح ڈر سنانے والا ہوں ۔
And when the decision will have been given , Satan will say : Indeed Allah gave you a true promise , and I ( also ) promised you something ; so I have violated the promise . And I had no authority over you ( in the world ) except that I called you ( towards falsehood ) . So you accepted my call ( for your own interest ) . Now do not blame me but blame your ( own ) selves . I can do nothing ( today ) to help you out , nor can you extend any help to me . Before this you have been associating me as a partner ( with Allah ) . Surely I deny that ( today ) . Undoubtedly there is a painful punishment for the wrongdoers .اور شیطان کہے گا جبکہ فیصلہ ہو چکے گا کہ بیشک اللہ نے تم سے سچا وعدہ کیا تھا اور میں نے بھی تم سے وعدہ کیا تھا ، سو میں نے تم سے وعدہ خلافی کی ہے ، اور مجھے دنیا میں تم پر کسی قسم کا زور نہیں تھا سوائے اس کے کہ میں نے تمہیں باطل کی طرف بلایا سو تم نے اپنے مفاد کی خاطر میری دعوت قبول کی ، اب تم مجھے ملامت نہ کرو بلکہ خود اپنے آپ کو ملامت کرو ۔ نہ میں آج تمہاری فریاد رسی کرسکتا ہوں اور نہ تم میری فریاد رسی کر سکتے ہو ۔ اس سے پہلے جو تم مجھے اللہ کا شریک ٹھہراتے رہے ہو بیشک میں آج اس سے انکار کرتا ہوں ۔ یقینا ظالموں کے لئے دردناک عذاب ہے ۔
I want ( I commit no offence and ) you take my sin ( i . e . sin of killing me ) , and also your own sin ( the preceding one on account of which your offering has been rejected all ) on you . You will then become one of the inmates of Hell . And that is but the punishment of the wrongdoers .میں چاہتا ہوں کہ مجھ سے کوئی زیادتی نہ ہو اور میرا گناہ قتل اور تیرا اپنا سابقہ گناہ جس کے باعث تیری قربانی نامنظور ہوئی سب توہی حاصل کرلے پھر تو اہل جہنم میں سے ہو جائے گا ، اور یہی ظالموں کی سزا ہے ۔
( Azar ) said : Ibrahim ( Abraham ) , have you turned away from my gods ? If you do not practically desist ( from this opposition ) I will certainly stone you to death . And keep away from me for a long while .آزر نے کہا : اے ابراہیم ! کیا تم میرے معبودوں سے روگرداں ہو ؟ اگر واقعی تم اس مخالفت سے باز نہ آئے تو میں تمہیں ضرور سنگ سار کر دوں گا اور ایک طویل عرصہ کے لئے تم مجھ سے الگ ہوجاؤ ۔
Then when ( Ismail [ Ishmael ] ) reached ( the age of ) the ability to run about with him , Ibrahim ( Abraham ) said : O my son , I have seen in a dream that I am sacrificing you . So think , what is your opinion ? Ismail ( Ishmael ) said : O my father , do that ( immediately ) which you are being commanded . If Allah wills , you will find me among the patient ( and steadfast ) .پھر جب وہ اسماعیل علیہ السلام ان کے ساتھ دوڑ کر چل سکنے کی عمر کو پہنچ گیا تو ابراہیم علیہ السلام نے فرمایا : اے میرے بیٹے ! میں خواب میں دیکھتا ہوں کہ میں تجھے ذبح کررہا ہوں سو غور کرو کہ تمہاری کیا رائے ہے ۔ اسماعیل علیہ السلام نے کہا : اباجان ! وہ کام فورا کر ڈالیے جس کا آپ کو حکم دیا جا رہا ہے ۔ اگر االله نے چاہا تو آپ مجھے صبر کرنے والوں میں سے پائیں گے ۔
Whosoever cometh to me , and heareth my sayings , and doeth them , I will shew you to whom he is like .جو کوئی میرے پاس آتا ہے اور میری باتیں سن کر عمل کرتا ہے میں تمہیں جتاتا ہوں کہ وہ کس کی مانند ہے ۔
And Jesus answered and said unto them , I will also ask of you one question , and answer me , and I will tell you by what authority I do these things .یسوع نے ان سے کہا میں تم سے ایک بات پوچھتا ہوں تم جواب دو تو میں تم کو بتاونگا کہ ان کاموں کو کس اختیار سے کرتا ہوں ۔
And when Allah will say : O Isa son of Maryam ( Jesus son of Mary ) ! Did you ask the people to take you and your mother as two gods besides Allah ? He will submit : Glory be to You ! It is not ( justified ) for me to say such a thing as I have no right to say . Had I said it You would surely have known it . You know every such ( thing ) that is in my heart , but I do not know those ( things ) which are in Your knowledge . It is only You indeed Who Know Well all that is unseen .اور جب االله فرمائے گا : اے عیسٰی ابن مریم ! کیا تم نے لوگوں سے کہا تھا کہ تم مجھ کو اور میری ماں کو االله کے سوا دو معبود بنا لو ، وہ عرض کریں گے : تو پاک ہے ، میرے لئے یہ روا نہیں کہ میں ایسی بات کہوں جس کا مجھے کوئی حق نہیں ۔ اگر میں نے یہ بات کہی ہوتی تو یقینا تو اسے جانتا ، تو ہر اس بات کو جانتا ہے جو میرے دل میں ہے اور میں ان باتوں کو نہیں جانتا جو تیرے علم میں ہیں ۔ بیشک تو ہی غیب کی سب باتوں کو خوب جاننے والا ہے ۔
If ye abide in me , and my words abide in you , ye shall ask what ye will , and it shall be done unto you .اگر تم مجھ میں قائم رہو اور میری باتیں تم میں قائم رہیں تو جو چاہو مانگو ۔ وہ تمہارے لئے ہوجائے گا ۔
( Zulaikhas trick worked . ) She spoke ( at this juncture ) : It is this ( embodiment of light ) you have been reproaching me for . It is , no doubt , I myself who sought to seduce him ( under violent urge ) but he remained firmly upright and did not yield . And if ( even now ) he does not do what I ask him for , he will surely be put into prison and will certainly be disgraced .زلیخا کی تدبیر کامیاب ہوگئی تب وہ بولی : یہی وہ پیکر نور ہے جس کے بارے میں تم مجھے ملامت کرتی تھیں اور بیشک میں نے ہی اپنی خواہش کی شدت میں اسے پھسلانے کی کوشش کی مگر وہ سراپا عصمت ہی رہا ، اور اگر اب بھی اس نے وہ نہ کیا جو میں اسے کہتی ہوں تو وہ ضرور قید کیا جائے گا اور وہ یقینا بے آبرو کیا جائے گا ۔
Musa ( Moses ) said : You will certainly find me patient , if Allah so pleases , and I will not violate any of your instructions .موسٰی علیہ السلام نے کہا : آپ ان شاء االله مجھے ضرور صابر پائیں گے اور میں آپ کی کسی بات کی خلاف ورزی نہیں کروں گا ۔
He will say : O my Lord , why have You raised me up blind ( today ) whereas I had vision ( in the world ) ?وہ کہے گا : اے میرے رب ! تو نے مجھے آج اندھا کیوں اٹھایا حالانکہ میں دنیا میں بینا تھا ۔
And , O my people , if I drive them away then who will come to my help ( to rescue me ) from ( the wrath of ) Allah ? Do you not reflect ?اور اے میری قوم ! اگر میں ان کو دھتکار دوں تو االله کے غضب سے بچانے میں میری مدد کون کر سکتا ہے ، کیا تم غور نہیں کرتے ۔
Musa ( Moses ) said : This ( agreement ) is ( settled ) between me and you . Whichever of the two terms I complete , I will not be forced . And Allah is the Custodian over what we say .موسٰی علیہ السلام نے کہا : یہ معاہدہ میرے اور آپ کے درمیان طے ہوگیا ، دو میں سے جو مدت بھی میں پوری کروں سو مجھ پر کوئی جبر نہیں ہوگا ، اور اللہ اس بات پر جو ہم کہہ رہے ہیں نگہبان ہے ۔
( Also ) say ( to them ) : Tell me if the punishment of Allah comes upon you all of a sudden or openly , will ( any other ) be destroyed except those who do injustice ?آپ ان سے یہ بھی فرما دیجئے کہ تم مجھے بتاؤ اگر تم پر االله کا عذاب اچانک یا کھلم کھلا آن پڑے تو کیا ظالم قوم کے سوا کوئی اور ہلاک کیا جائے گا ۔
And his people started disputing and contending with him . ( Then ) he said : Do you dispute with me about Allah Who He has in fact guided me aright ? And I fear not these ( false gods ) that you associate with Him except that whatever ( harm ) my Lord may will ( He can do ) . My Lord has encompassed everything with ( His ) knowledge . So , do you not accept admonition ?اور ان کی قوم ان سے بحث و جدال کرنے لگی تو انہوں نے کہا : بھلا تم مجھ سے اللہ کے بارے میں جھگڑتے ہو حالانکہ اس نے مجھے ہدایت فرما دی ہے ، اور میں ان باطل معبودوں سے نہیں ڈرتا جنہیں تم اس کا شریک ٹھہرا رہے ہو مگر یہ کہ میرا رب جو کچھ ضرر چاہے پہنچا سکتا ہے ۔ میرے رب نے ہر چیز کو اپنے علم سے احاطہ میں لے رکھا ہے ، سو کیا تم نصیحت قبول نہیں کرتے ۔
Then He will humiliate them on the Day of Resurrection and say : Where are those that you set up as peers to Me and in whose favour you disputed ( with the believers ) ? Those endowed with knowledge will say : Today ( all types of ) humiliation and destruction will surely befall the disbelievers .پھر وہ انہیں قیامت کے دن رسوا کرے گا اور ارشاد فرمائے گا : میرے وہ شریک کہاں ہیں جن کے حق میں تم مومنوں سے جھگڑا کرتے تھے ؟ وہ لوگ جنہیں علم دیا گیا ہے کہیں گے : بیشک آج کافروں پر ہر قسم کی رسوائی اور بربادی ہے ۔
Showing page 1. Found 5272 sentences matching phrase "will you marry me".Found in 6.801 ms. Translation memories are created by human, but computer aligned, which might cause mistakes. They come from many sources and are not checked. Be warned.